IQNA

8:47 - January 24, 2021
خبر کا کوڈ: 3508809
تہران(ایکنا) جمعیت اسلامی الوفاق بحرین نے بیان میں روحانی مقدس مرکز اور عظیم اسلامی پیشوا حضرت امام علی بن موسی الرضا(ع)، نواسہ رسول حضرت محمد مصطفی(ص) کے آستانے پر پابندی کو اخلاقی پستی کی علامت قرار دیا۔

انسٹا گرام پر «جمعية الوفاق الوطني الإسلامية»، (جمعیت ملی ـ اسلامی الوفاق) بحرین  جو بحرین میں  رژیم آل خلیفه کے سخت ترین مخالفین میں شمار ہوتا ہے انہوں نے موجود حالات کے حوالے سے بیان جاری کیا ہے۔

 

بیان میں عراق دھماکہ، آستانہ قدس رضوی پر پابندی اور اسرائیل سے تعلقات کے حوالے سے اظھار نظر کیا گیا ہے جبکہ بحرین میں عوامی مطالبات کی بھی بات ہوئی ہے۔

 

جمعیت الوفاق بحرین نے بغداد خودکش حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے: اسلام کے مخالفین اب بھی اسلام مخالف دہشت گردی کو راہ حل سمجھتے ہیں اور ضروری ہے کہ اس شدت پسندانہ افکار کی بیخکنی کی جائے۔

 

الوفاق نے گذشتہ جمعے کو بحرین میں اسرائیل سے دوستی کی مخالفت میں ریلی کو کامیاب قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس عظیم مظاہرے کو سنسر کرکے حقیقت کو چھپانے کی کوشش کی گئی ہے تاہم اس کی ویڈیو شایع کی جارہی ہے۔.

 

 

 الوفاق نے عوامی مطالبات کی حمایت کرتے ہوئے ملک میں نا انصافی کو عوامی حقوق پر ڈھاکہ قرار دیا ہے۔

 

 الوفاق نے مظاہرے کو فلسطین و قدس سے وفاداری کی علامت اور دلیل قرار دیا۔

 

جمعیت الوفاق بحرین نے امریکہ کی جانب سے آستانہ قدس رضوی پر پابندی کو امریکی اخلاق کی گرواٹ کا نشان قرار دیتے ہوئے کہا: یہ مقدس مقام اور مکان نواسہ رسول اور عالم اسلام کے عظیم رھنما اور پیشوا حضرت امام علی بن موسی الرضا(ع)، نوه کا حرم مبارک ہے۔

 

 

جمعیت ملی ـ اسلامی الوفاق بحرین نے حقوق کے مطالبے کے لیے اسیر قیدیوں سے بھی یکجہتی کا اعلان کیا اور کہا کہ عوامی حقوق کی حمایت جاری رہے گی۔/

3949324

نام:
ایمیل:
* رایے:
* captcha: