IQNA

9:02 - October 23, 2019
خبر کا کوڈ: 3506772
بین الاقوامی گروپ: افغانستان میں طالبان کے ساتھ جھڑپوں میں 18 پولیس اہلکار ہلاک ہوگئےجبکہ افغان سیکیورٹی اداروں نے جوابی کارروائی میں بڑی تعداد میں طالبان کے مارے جانے کا دعویٰ کیا ہے۔
ایکنانیوز- ڈیلی پاکستان کے مطابق افغانستان کے شمالی صوبے قندوز کے ضلع علی آباد میں طالبان کی جانب سے رات گئے سیکیورٹی چیک پوسٹ پر حملہ کیا گیا۔افغان پولیس کی جانب سے کئی گھنٹے تک طالبان کا مقابلہ کیا گیا تاہم اس دوران چیک پوسٹ کے نگران کمانڈر سمیت 18 پولیس اہلکار ہلاک اور 2 زخمی ہوگئے،حکام کے مطابق طالبان کو بھی اس لڑائی میں جانی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔
 
دوسری طرف افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے چیک پوسٹ پر حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔واضح رہے کہ افغانستان کے شمالی صوبہ قندوز میں طالبان کا کافی اثرو رسوخ ہے اور صوبے کےمتعدد اضلاع طالبان کے کنٹرول میں ہیں۔سٹریٹیجک اہمیت کےباعث قندوز پرمکمل قبضےکیلئے افغان طالبان کی جانب سے کافی عرصے سے کوششیں کی جارہی ہیں۔
 
ایک عرب ٹی وی چینل  کے مطابق افغانستان کے آدھے رقبے پر طالبان کا قبضہ ہے اور طالبان کی جانب سے تقریبا روزانہ ہی سیکیورٹی فورسز پر حملے کیےجاتے ہیں جن میں بڑی تعداد میں دونوں طرف سے جانی نقصان ہوتا ہے۔ اقوام متحدہ کی جانب سے گذشتہ 3 ماہ میں افغانستان میں عام شہریوں کی ہلاکتوں پر تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔ اقوام متحدہ  کا کہنا ہےکہ افغانستان میں ہونے والے بم دھماکوں اور دیگر واقعات میں سیکیورٹی فورسز اور طالبان سے زیادہ عام شہریوں کی ہلاکتیں ہورہی ہیں۔
نام:
ایمیل:
* رایے: