IQNA

20:43 - November 13, 2019
خبر کا کوڈ: 3506856
بین الاقوامی گروپ- تقریب مذاہب اسلامی کو نسل کے سربراہ نے امت کے دشمنوں سے مقابلے پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ بعض علما کا تعصب وحدت کی راہ میں رکاوٹ ہے۔

ایکنا نیوز- آیت‌الله شیخ محمدعلی تسخیری زاده نجف میں پیدا ہوئے، مجلس خبرگان کے رکن، مجمع تقریب مذاہب اسلامی کونسل کے سرابہ اور رھبر انقلاب کے اسلامی امور کے حوالے سے مشیر ہے

هفته وحدت و میلاد پیامبر(ص) کی مناسبت سے اس عظیم دانشور، مفسر قرآن، مصنف اور محقق سے انکے دفتر میں ایکنا کے نمایندے نے عالم اسلام اور وحدت کے حوالے سے ان سے گفتگو کی ۔

ایکنا ــ الازهر کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہیں؟

الازهر کی بنیاد وحدت پر مبنی تھی اور فاطمیون کے دور میں اس مرکز کا قیام عمل میں لایا گیا اور اس وقت اس میں پانچ مسالک

 (شیعه، شافعی، حنفی، مالکی اور حنبلی) پڑھائے جاتے تھے۔

خصوصی گفتگو/آیت‌‌الله تسخیری کی نگاہ میں اتحاد کی راہ میں رکاوٹ/ الازهر سے تعاون پر آمادہ

سال‌ 1940 تک وحدت کا پرچم الازھر کے ہاتھ میں تھا اور اس حوالے سے انکی سرگرمیاں اچھی جارہی تھیں اور اس وقت

الازھر کے علما قم کے علما سے رابطے میں تھے اور «رسالة الاسلام» میگزین کے علاوہ  امامی(شیعی) فقہ کی تدریس جاری تھی۔

ایکنا ــ الازهر کی وحدت کی کوشش کہاں تک پہنچی؟

سال‌ 1940 سے  1970 کے بعد الازھر کے جید علما کے بعد سے تقریب کی کاوشوں کو نقصان پہنچا اور انقلاب اسلامی ایران پھر ٹھونسی گیی جنگ کے بعد رھبر انقلاب نے دارالتقریب کا پرچم بلند کیا، البتہ دارالتقریب کی بجایے مجمع جھانی تقریب اسلامی کی بنیاد ڈالی گیی جسکا مقصد وحدت تھا، ہم نے کوشش کی کہ قاہرہ کے دارالتقریب کے سلسلے کو آگے بڑھائے تاہم کامیابی نہ مل سکی۔

خصوصی گفتگو/آیت‌‌الله تسخیری کی نگاہ میں اتحاد کی راہ میں رکاوٹ/ الازهر سے تعاون پر آمادہ

ایکنا ــ آپ کی نظر میں وحدت کی راہ میں اہم رکاوٹ کیا ہے؟

اس حوالے سے کافی باتیں ہیں تاہم خلاصے کے طور پر کہا جاسکتا ہے کہ وحدت میں تعصب اہم ترین رکاوٹ ہے ، بعض علما کے تعصب جو دوسروں کو کافر دینے اور برا بھلا کہنے پر تلے ہوئے ہیں۔

ایک اور رکاوٹ جہالت ہے بعض طبقوں کی جہالت جو دوسروں کے بارے میں کچھ نہیں جانتے ، ورنہ اگر ایکدوسرے کو سمجھتے اور مشترکات پر توجہ دی جاتی تو بہت کچھ ممکن تھا تاہم جہالت کی وجہ سے وحدت میں رکاوٹ باقی رہی۔

خصوصی گفتگو/آیت‌‌الله تسخیری کی نگاہ میں اتحاد کی راہ میں رکاوٹ/ الازهر سے تعاون پر آمادہ

ایک اور رکاوٹ ذاتی مفادات ہے جو بعض اسلامی ممالک پر حاکم نظام کی وجہ سے ہے ، عالم اسلامی کی وحدت انکے مفادات کی راہ میں رکاوٹ ہے ، عالمی استعماری طاقتوں کے اہداف اور عالم اسلام کی وحدت دو متضاد چیزیں ہیں۔ انکی کوشش ہے کہ مسلمانوں میں اتحاد پیدا نہ ہو اور یہ مسائل اہم رکاوٹوں میں شامل ہیں، جب تک مسلمانوں میں ہم آہنگی پیدا نہیں ہوتی استعماری اہداف کو ختم کرنا مشکل ہے۔

3856095

نام:
ایمیل:
* رایے: