IQNA

مسلم نوجوانوں انڈین فوج میں بھرتی کی ترغیب

19:09 - June 25, 2022
خبر کا کوڈ: 3512146
تہران ایکنا: لکھنؤ میں مسلم دانشوروں کے ایک گروپ نے اگنی پتھ اسکیم کے ذریعے مسلم نوجوانوں کو بڑی تعداد میں ہندوستانی فوج میں شامل ہونے کی ترغیب دینے کا بیڑہ اٹھایا ہے۔

اردو آواز کے مطابق شاہد کامران کی قیادت میں اس گروپ نے ایسوسی ایشن آف دی مسلم پروفیشنلز (اے ایم پی) کے نام سے ایک گروپ بنایا ہے جس کا مقصد ہندوستانی مسلح افواج میں داخلے کے لیے اگنی پتھ اسکیم کے بارے میں خوف، بدگمانیوں اور خدشات کو دور کرنا ہے اور اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ زیادہ سے زیادہ مسلم نوجوان درخواست دیں۔

اس کام کے لیے اے پی ایم نے علما سے اپیل کی ہے کہ وہ نوجوانوں سے اپیل کریں کہ وہ اگنی پتھ کی طرف سے پیش کردہ موقع کا فائدہ اٹھائیں اور اتر پردیش کے شہروں میں جمعہ کے اجتماعات کے دوران مسلح افواج میں شامل ہو کر ملک کی خدمت کریں جو کہ اگنی پتھ مخالف مظاہروں کا تجربہ کرنے والے مقامات میں شامل تھے۔

شاہد کامران نے کہا، "ہم دیگر اسکیموں کی طرح ہی مرکزی حکومت کی اگنی پتھ اسکیم کی حمایت کرتے ہیں۔ ہمارا پیغام مختلف شہروں کے نامور علماء اور مساجد کے امام اہل مسلم نوجوانوں تک پہنچائیں گے۔ اس کے لیے ان کی طرف سے جمعہ کی نماز میں خصوصی اپیل کی جائے گی۔

کامران نے کہا، ’’ہم سوشل میڈیا کی مدد بھی لے رہے ہیں، فوج میں ملازمت کے مواقع تلاش کرنے والے مسلم نوجوانوں کی رہنمائی کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ علماء جمعہ کے اجتماعات میں اسکیم کی تفصیلات شیئر کریں گے تاکہ 10ویں اور 12ویں پاس آؤٹ ہونے والے فوری طور پر درخواست دے سکیں کیونکہ رجسٹریشن کا عمل جمعہ 24 جون سے شروع ہوگا۔

درخواست دہندہ کو آن لائن امتحان میں بیٹھنا ہوگا۔ سنی علماء کونسل کے کنوینر حاجی محمد سیلس نے کہا کہ امیدواروں کی عمریں 17 سال چھ ماہ اور 23 سال کے درمیان ہونی چاہئیں۔

انہوں نے کہا کہ اس اقدام کو کمیونٹی کی طرف سے حوصلہ افزا ردعمل ملا ہے۔ اگنی ویر بننے سے مسلم نوجوانوں کو کئی طرح سے فائدہ پہنچے گا۔ زیادہ سے زیادہ مسلمان اس اسکیم کے لیے درخواست دیں اور ملک کی خدمت کریں"۔۔

ایک اور عالم مولانا خیرالدین نے کہا کہ انہوں نے اگنی پتھ اسکیم کی تفصیلات سوشل میڈیا پر شیئر کی ہیں اور لوگوں سے پورٹل سے مزید تفصیلات حاصل کرنے کو کہا ہے۔ اگنی پتھ اسکیم ایک نئی پہل ہے جو حکومت ہند کی طرف سے 14 جون 2022 کو متعارف کرائی گئی تھی، جس میں مسلح افواج کی تینوں سروسیز میں کمیشنڈ افسروں کے درجے سے کم فوجیوں کی بھرتی کی جانی ہے۔

اس اسکیم کے تحت بھرتی ہونے والے افراد چار سال کی مدت کے لیے خدمات انجام دیں گے جس میں چھ ماہ کی تربیت اور اس کے بعد 3.5 سال کی تعیناتی شامل ہے۔ جبکہ 75 فیصد بھرتی ہونے والے چار سال بعد ریٹائر ہو جائیں گے، باقی مسلح افواج کے مستقل کیڈر میں شامل ہو جائیں گے۔ 4 سال کی سروس کے بعد ریٹائر ہونے والے اہلکاروں کو 11.71 لاکھ روپے کا یک وقتی پیکیج ملے گا۔

 

نام:
ایمیل:
* رایے:
* :