IQNA

9:07 - December 04, 2019
خبر کا کوڈ: 3506931
بین الاقوامی گروپ- برما کے اسقف اعظم نے درخواست کی ہے کہ دیگر مذاہب کا احترام اور اقلیتوں پر تشدد روک دیا جائے۔

ایکنا نیوز- خبررساں ادارے فیدس کے مطابق میانمار کے اسقف اعظم «چارلز ماونگ بو» نے برما رہنماوں کے نام ایک پیغام میں کہا: تشدد روک دیجیے کیونکہ یہ وقت ضرورت مندوں پر توجہ دینے کا ہے۔

 

انکا کہنا تھا: برما کے رہنماوں سے میری درخواست ہے کہ وہ مذاہب میں تصادم کی بجائے بین المذاہب گفتگو کا راستہ اپنائیں اور ایک دوسرے کے ساتھ محبت سے رہنے کا تجربہ کریں۔

 

اسقف اعظم نے عالمی عدالت میں برما مظالم کے کیس کے حوالے سے کہا کہ کوشش کریں صرف وہ لوگ سزا کا حقدار پائے جنہوں نے ظلم کیا ہے کسی اور کو سزا نہ دی جائے۔

 

قابل ذکر ہے کہ اگست ۲۰۱۷ کے بعد سے برما فوج اور بدھسٹ شدت پسندوں کے حملوں میں ہزاروں لوگ ہلاک اور زخمی ہوئے جبکہ لاکھوں جان بچانے کے لیے ملک چھوڑنے پر مجبور ہوئے۔ سینکڑوں دیہات بھی نذر آتش کیے گیے۔

 

اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق سال ۲۰۱۷ سے اب تک ساتھ لاکھ سے زاید روھنگیا بنگلہ دیش ہجرت کرچکے ہیں اور ان میں ساٹھ فیصد بچوں کی ہے۔

اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی تنظیمیں برما میں قتل عام کو نسل کشی قرار دے چکی ہیں۔/

3861477

نام:
ایمیل:
* رایے: