IQNA

9:52 - January 20, 2021
خبر کا کوڈ: 3508793
تہران(ایکنا) مشرقی اسکندریه میں دو بھائی اور ایک بہن نے بینائی سے محرومی کے باوجود قرآن حفظ کرلیا ہے۔

محمد، فارس اور ملک تین مصری بہن بھائی ہیں جو مشرقی اسکندریہ کے علاقے المندره میں رہتے ہیں جنہوں نے بینائی سے محرومی اور مشکلات کے باوجود قرآن حفظ کرلیا ہے۔

 

تینوں مصری بہن بھائی اس وقت الازهر میں مصروف تعلیم ہیں اور محمد و فارس نے مکمل قرآن کو ۷ مختلف روش میں حفظ کیا ہے جبکہ چھوٹی بہن ملک نے قرآن کا پانچ پارہ حفظ کیا ہے۔

 

محمد احمد حسن ۱۴ ساله الازهر میں مصروف تعلیم ہے جنہوں نے ۸ سال کی عمر میں قرآن حفظ کرلیا تھا۔

 

محمد  سال ۲۰۱۵ میں بہت سے مقابلوں میں شریک ہوئے اور انہوں نے مصر کے مقابلوں میں پہلی پوزیشن حاصل کی اور پھر تین سال تک ناقابل شکست رہے۔

 

وہ شیخ منشاوی اور مصطفی اسماعیل کے بہت فین ہے اور خاندان کی جانب سے حفظ میں مدد کرنے پر انکے شکرگزار۔

فارس احمد حسن  ۱۲ سال کی ہے اور انہوں نے ۱۱ کی عمر میں قرآن حفظ کیا انہوں نے سال ۲۰۱۳ کو مصر کے ادارہ اوقاف کے مقابلوں میں پہلی پوزیشن حاصل کی۔

 

ننھی  ملک احمد  ۱۰ سال کی ہے اور قرآن کے پانچ پاروں کی حافظہ ہے۔

 

بچوں کے باپ احمد حسن، تینوں بچوں کی صلاحیتوں اور حفظ قرآن پر خدا کے شکر گزار ہے اور انکا کہنا ہے کہ انکے بچوں نے خط بریل کی مدد سے قرآن حفظ کیا ہے اور عشق قرآن سے مشکلات انکو حفظ سے روک نہ سکی۔/

3948661

نام:
ایمیل:
* رایے:
* captcha: